یادداشت

زیادہ دیکھے گئے موضوعات

ہم سے تعاون کریں

قبرستان کا سناٹا ؟ …


قبرستان کا سناٹا ؟ …

( ۰ Votes ) 

grey قبرستان کا سناٹا ؟ ...

خلیج فارس کے جنوبی ساحلی ملکوں کے سربراہوں سے ملاقات میں باراک اوباما نے جو کچھ کہا اس سے سب سے زیادہ یہ ثابت ہوتا ہے کہ اسلامی جمہوریہ ایران  علاقے اور عالمی سطح پر ایک طاقتور اور موثر ملک ہے ۔
امریکی صدر نے اس ملاقات میں کہا کہ ایران علاقے میں ناپائداری پیدا کرنے والے اقدامات انجام دے رہا ہے لیکن کوئی بھی ملک اس کے ساتھ بھڑنے میں دلچسپی نہیں رکھتا ۔ ویسے یہ بھی واضح کرنا ضروری ہے  ناپائداری پیدا کرنے والے اقدامات سے اوباما کی مراد در اصل ایران کے وہ اقدامات ہیں جن کی بناء پر امریکہ اور اس کے اتحادیوں کو علاقے کے کئی ملکوں میں مداخلت کا موقع نہیں ملا اور علاقے میں ان کی پالیسیاں ناکام ہو گئیں ۔
در اصل امریکہ اور اس کے علاقائی ایجنٹوں کی خواہش ہے کہ عرب ملکوں پو قبرستان جیسا سناٹا طاری ہو جائے تاکہ اس خاموشی میں ان کے مفادات کی تکمیل ہو سکے ۔ ان حالات میں فطری بات ہے کہ امریکہ اور ان عرب سربراہوں کو ایران کانٹے کی طرح کھٹکے  لیکن ان کی یہ تشویش ، ایران اور استقامت کے محاذ کے طاقتور ہونے کی دلیل ہے ۔ ایران ناپائداری نہیں بلکہ علاقے میں پائداری کی علامت ہے اور اگر عرب سربراہ عقل کا استعمال کریں تو انہیں یہ حقیقت واضح طور پر نظر آ جائے گی ۔
ریاض ، خلیج فارس تعاون کونسل میں اپنے حلیفوں کی مدد سے ایران کو نقصان پہنچانے کی مسلسل کوششوں میں مصروف ہے ۔ اس کے علاوہ وہ اسلامی تعاون تنظیم اور عرب لیگ جیسی تنظیموں کو بھی ایران پر دباؤ ڈالنے کے لئے استعمال کرتا ہے ۔ در اصل ، شام ، عراق  جیسے مختلف میدانوں میں شکست  اور دہشت گردی کو حمایت کے سلسلے میں سعودی عرب کے کردار کے برملا ہونے سے ، سعودی حکام پوری دنیا میں بدنام ہو رہے ہیں اور اس سے عالمی رائے عامہ میں ان کے خلاف نفرت کے جذبات بڑھتے جا رہے ہیں ۔
سعودی عرب موجودہ حالات سے باہر نکلنے اور اپنے اقدامات کا جواز پیش کرنے کے لئے ، رائے عامہ میں ایران کی جانب سے فرضی خطرہ پیدا کرنے کی کوشش میں ہے۔ اس کی ایک مثال او آئی سی کے حالیہ اجلاس میں ایران کے خلاف بیان کی شکل میں دیکھا جا سکتا ہے ۔  اس کے  علاوہ ، سعودی حکام ، حزب اللہ اور ایران کے خلاف اپنے نئے اقدامات سے ، امریکہ اور صیہونیوں کی خوشنودی حاصل کرنے کی بھی کوشش کر رہے ہیں تاکہ اس طرح سے ان کی ناکامیوں کے اثرات کو کسی حد تک کم کیا جا سکے  اور امریکہ کو بھی گریٹر میڈل ایسٹ کے منصوبے کی ناکامی کے بعد زیادہ فرمانبردار  اتحادیوں کی ضرورت محسوس ہو رہے ہیں۔

sharethis قبرستان کا سناٹا ؟ ...

جواب ارسال کریں

آپ کا ای میل (نشر نہیں کیاجاٗے گا).
لازمی پر کرنے والے خانوں میں * کی علامت لگا دی گئی ہے.

*


6 − پنج =

رابطہ کیجیے | RSS |نقشہ سائٹ

اس سائٹ اسلام ۱۴ کے جملہ حقوق محفوظ ہیں،حوالے کے ہمراہ استفادہ بلامانع ہے